اسلام آباد(سید بدر شہباز شاہ) وزیراعظم عمران خان آج نارووال کے قریب کرتارپور راہداری کا سنگ بنیاد رکھیں گے، راہداری کی تعمیر کے بعد سکھ یاتریوں کو کرتارپور آنے کیلئے ویزہ لینے کی ضرورت نہیں ہوگی۔گوردوارہ کرتار صاحب پر کرتارپور راہداری کے سنگ بنیاد کی تقریب کے تمام انتظامات مکمل کرلئے گئے ہیں اور بھارت سے نوجوت سنگھ سدھو کیلئے خیرمقدمی بینرز بھی آویزاں کئے گئے ہیں۔ کمشنر گوجرانوالہ ڈویڑن اسداللہ اور چناب رینجرز کے ونگ کمانڈرعدیل یوسف نے گوردوارہ کرتار صاحب میں انتظامات کا جائزہ لیا اور اس موقع پرسکھ یاتریوں میں مٹھائی تقسیم کی گئی ۔کرتارپور کوریڈور ڈیزائن سے متعلق معلوماتی بورڈ کے مطابق کرتارپور کوریڈور فیز1 میں ساڑھے چارکلو میٹرسڑک تعمیر کی جائے گی جبکہ بارڈر ٹرمینل کمپلیکس بھی تعمیر کیا جائے گا ۔کرتار پور کوریڈور میں دریائے راوی پر 800 میٹر پل، پارکنگ ایریا اور سیلاب سے بچاو کیلئے فلڈ پروٹیکشن بند بھی تعمیر ہو گا۔ دوسرے فیز میں ہوٹل اورگوردوارہ کرتار صاحب کی توسیع کا عمل مکمل کیا جائے گا۔وزیراعظم نے واضح پیغام دیا کہ پاکستان اور مسلمان امن پسند ہیں، اس حوالے سے وفاقی وزیر برائے مذہبی امور پیر نورالحق قادری نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی گوردوارہ کرتارپور صاحب آمد باعث فخر ہے، وزیراعظم کے کرتارپور راہداری کھولنے کے اعلان پر پوری سکھ قوم بلکہ دیگر مذاہب کے لوگ بھی خوشی کا اظہار کررہے ہیں۔