اسلام آباد(سی این این) وزیر اعظم عمران خان نے پنجاب پارلیمانی پارٹی کو یقین دہانی کرائی کہ پریشان ہوں اور نہ ڈرنے کی ضرورت ہے، اپوزیشن کے پاس حکومت مخالف احتجاج کیلئے کوئی اخلاقی جواز نہیں ، انہوں نے کہا کہ میں سعودی عرب کے بعد چین جا رہا ہوں، قرض نہیں بلکہ پاکستان میں سرمایہ کاری لائیں گے،عمران خان نے پنجاب میں مسافر خانوں کے منصوبے کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعلی پنجاب کا صوبے کے مختلف اضلاع میں سائبان فراہم کرنے کا منصوبہ قابل تعریف ہے۔انہوں نے تجاوزات اور قبضہ مافیا کے خلاف آپریشن میں بڑے بڑے لوگوں پر ہاتھ ڈالا جا رہا ہے،اس سلسلے میں غریب لوگوں کو تنگ نہ کیا جائے ۔وزیراعظم عمران خان نے پنجاب کے وزرا کو خبردار کرتے ہوئے صاف بتا دیا ہے کہ جو کام نہیں کرے گا، وہ گھر جائے گا۔ ہمیں عوام کو ڈیلیور کرنا ہے، اپوزیشن کا کام تنگ کرنا ہے، ہم کوترجیحات کا تعین کر کے عوام کی خدمت کرنا ہوگی ۔وزیراعظم نے لاہور کا مختصر دورہ کیا، گورنر ہاوس پہنچنے پر چودھری محمد سرور نے ان کا استقبال کیا۔ ایوان وزیرِاعلیٰ میں وزیراعظم سے وزیرِاعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے ملاقات کی اس موقع پر وزیرِاعلیٰ نے 100 روزہ پلان پر عمل درآمد اور ہاﺅسنگ منصوبے پر پیش رفت پر اعتماد میں لیا۔ وزیراعظم سے سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الہٰی نے بھی ملاقات کی جس میں پنجاب میں اتحاد اور دیگر پالیمانی امور پر غور وغوض کیا گیا ۔وزیراعظم عمران خان نے پارٹی کے ارکان پنجاب اسمبلی اور صوبائی وزرا ءسے بھی خطاب کیا۔ وزیراعظم نے وزرا کو صاف بتا دیا کہ کارکردگی دکھانا ہو گی، اگلے 60 روز مانیٹرنگ ہو گی، کام نہ کرنے والے کوگھر بھیج دیا جائے گا ۔