تہران: ایران کے صدر حسن روحانی نے خبردار کیا ہے کہ امریکہ شیر کی دم کے ساتھ نہ کھیلے اور کہا کہ ایران کے ساتھ تنازعہ’’تمام جنگوں کی ماں‘‘ہوگا۔اپنے امریکی ہم منصب ڈونلڈ ٹرمپ کو مخاطب کرتے ہوئے روحانی کا کہنا تھا کہ آپ جنگ کا اعلان کرتے ہو اور پھر آپ ایرانی عوام کی حمایت کرنے کی خواہش کی بات کرتے ہو۔ روحانی نے اپنی دھمکی کو دہراتے ہوئے کہا کہ ایران سٹرٹیجک ہرمز بندرگاہ کو بند کرسکتا ہے جو کہ عالمی تیل سپلائز کیلئے اہم بحری راستہ ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران کے ساتھ امن تمام تر امن کی ماں اور جنگ تمام جنگوں کی ماں ہوگی۔ روحانی اتوار کو دیر گئے امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو کی جانب سے قبل بات چیت کر رہے تھے،جس کا شدت سے انتظار کیا جارہا ہے اور اسے ایران میں اسلامی حکومت کے خلاف بدامنی کی شروعات کے حوالے سے واشنگٹن کی کوششوں کے طور پر دیکھا جارہا ہے۔ روحانی نے کہا جب کبھی یورپ نے ہمارے ساتھ معاہدہ کرنا چاہا وائٹ ہاؤس نے اس کی مخالفت کا بیج بویا،تاہم انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں یہ بات نہیں سوچنی چاہئے کہ وائٹ ہاؤس مسلم دنیا کے خلاف عالمی قانون کی مخالفت میں اس سطح پر ہمیشہ برقرار رہے گا