سرینگر(سی این این)  جنگ بندی ختم، آپریشن شروع کر دو، مودی کا حکم ملتے ہی مقبوضہ وادی میں بھارتی ریاستی دہشت گردی کا ایک بار پھر آغاز، کلگام میں مظاہرین پر فائرنگ سے بیس سالہ اعجاز احمد بٹ شہید، درجنوں کشمیری زخمی ہو گئے۔ بانڈی پورہ میں بھی دو نوجوانوں کو شہید کر دیا گیا۔مقبوضہ وادی کشمیر میں نام نہاد جنگ بندی ختم ہونے کے بعد قابض بھارتی فوج نے ریاستی دہشت گردی کا سلسلہ ایک بار پھر شروع کر دیا، دن بھر مختلف علاقوں میں موت کا رقص جاری رہا۔ بانڈی پورہ میں سرچ آپریشن کی آڑ میں دو نوجوانوں کو شہید کر دیا گیا۔کلگام میں بھارتی مظالم کے خلاف مظاہرین سڑکوں پر نکل آئے تو قابض فورسز نے ان پر گولیوں کی بوچھاڑ کر دی۔ 20 سالہ نوجوان اعجاز احمد بٹ سینے پر گولی لگنے سے شہید ہو گئے، فائرنگ سے بچوں اور بوڑھوں سمیت درجنوں افراد زخمی ہو کر ہسپتال پہنچ گئے۔یاد رہے کہ گزشتہ روز مودی حکومت نے رمضان میں معطل کیا گیا نام نہاد سیز فائر ختم کرنے کا اعلان کر دیا تھا۔ بھارتی وزیرِ داخلہ راج ناتھ سنگھ نے ٹویٹ کی کہ مرکزی حکومت نے رمضان میں نافذ کی گئی جنگ بندی ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔وزیرِ داخلہ نے لکھا کہ حکومت جنگ بندی میں توسیع کرنے کے خلاف ہے۔ عیدالفطر کے پہلے دن بھی بھارتی فورسز نے کشمیری مظاہرین پر فائر کھولے جس سے ایک شہری شہید جبکہ درجنوں زخمی ہو گئے۔