گجرات(فدا حسین)گورنمنٹ اآف پاکستان کا نام استعمال کر کے لوگوں کو باہر بھجوانے کا لالچ دیکر قومی امن کمیٹی کے نام پر عہدے دیکر اور پرکشش مراعات کی ترغیب دلا کر معصوم شہریوں کو لوٹنے والےقومی امن کمیٹی برائے بین المذاہب ہم آہنگی کے چیئرمین علامہ ایاز ظہیر ہاشمی کو اسکی بیوی نوراصباح ھاشمی سمیت تھانہ گجرات پولیس نے گرفتار کر لیا، قبضہ سے لوگوں کو بیوقوف بنانے کے لے زیرا ستعمال گاڑیاں جس پر سرکاری گرین نمبر پلیٹ لگی تھیں بھی قبضہ میں لے لی گئی ، علامہ ایاز ظیر ہاشمی کے خلاف ٹیکسلا کے غلام ربانی نے بحی عدالت کے توسط سے تھانہ ٹیکسلا میں مقدمہ درج کرا رکھا تھا جس پر پولیس نے کوئی کاروائی نہیں کی، پولیس بااثر ملزمان سے ملی ہوی ہے ، قبل ازیں بھی یہ جیل کی ہوا کھا چکا ہے ، اسکی بیوی تمام دو نمبر کاموں میں اسکی شریک ہے ٹیکسلا میں بھی  لوگ اس کی ٹیم میں شریک ہیں ، واہ کینٹ ٹیکسلا جن لوگوں سے فراڈ ہوا ہے وہ تھانہ گجرات ڈی پی او سے فوری رجوع کریں ، دیگر شہروں کے لوگ بھی اس نادر موقع سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں ، مذکورہ شخص جو اپنے آاپ کو وزیر اعظم کا مشیر، اور کی دیگر حکومتی عہدے بتا تا تھا سب جعلسازی پر مبنی تھا،