اسلام آباد(کرائم سیل)سپریم کورٹ نے تقاریرپابندی ازخودنوٹس کیس میں سابق وزیراعظم نوازشریف اورمریم نواز کو نوٹسزجاری کردیئے۔چیف جسٹس ثاقب نثارنے کہا کہ محترم اٹارنی جنرل ہائیکورٹ کاحکم پڑھیں، عدالتی حکم کوپڑھے بغیرہی ڈھول پیٹاجاتارہا۔چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ پیمرا کانمائندہ کہاں ہے؟۔اٹارنی جنرل نے کہا کہ آپ نے کیس ایک بجے سماعت کیلئے لگایاتھا،اس پر چیف جسٹس نے کہا کہ ٹھیک ہے کیس کوایک یا 2 بجے سن لیتے ہیں۔چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ نوازشریف اورمریم نوازکوبھی نوٹس جاری کررہے ہیں۔اس پر اٹارنی جنرل نے کہا کہ میں نوازشریف اورمریم نوازکی دستیابی معلوم کرلیتاہوں۔جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ آج وہ ادھرہی ہوں گے۔چیف جسٹس نے کہا کہ اگرذاتی حیثیت میں نہیں آناچاہتے توان کے وکیل آجائیں۔جسٹس شیخ عظمت سعید نے کہاکہ چاہتے ہیں کہ ان کی عدالت میں نمائندگی ہو۔واضح رہے کہ گزشتہ روز لاہور ہائیکورٹ کے فل بنچ نے نوازشریف اور مریم نواز سمیت 16وزراکی تقاریر نشر کرنے پر پابندی عائد کی تھی جس پر چیف جسٹس پاکستان نے ازخودنوٹس لے رکھا ہے ۔